دوج با2

ان ءا ہور

0-0,/ وت ضپا (صلاانثر) را (صلاانثر)

از ۃ رت حر شاو ہنا رکاش ند دد کیا اد ہشن جفر تکیلی نو الیشریف

حعای یی لتشمند یکیائی

۹ اش جریک روغ تقلی ا نقشوندیہ ا2 دوگ باون ءلاہور رت

تم !گزاے جراطٰطرےثوباال تق مال شیٹھٹف نے لپن دس ت مبااک سے ترفراایٹس سےآپ ک ےشن الین

انمازہ ہوتاہے بے نے لا ام ذات نہامت

۶د43

٤ - کے‎

پا خہاؤڈل ححضرت سید ااوبکرصد بب ریشی اتال عد پچ جضورتبلہمیاں شی مج شرتجورینقشندی میردبی ریۃ ال علیہ ےلچ حضورقل سید رائسن شاوقشندری مددی رم ۃ الڈعلی

حضورقبلسید با یی شا نی مہردی رحمۃ ال علیہ

جا مور لیر لم تی شا :ین پیر رکارٹنشیندی ردب رحمۃ ال علی "لچ تائدمکت اسلا می امام النشا واج فورالیٰ دیق ی رح اللعلیہ

عا ری نیعبرا لففو رشن ریش رتورری رحۃ ال علی

)])2

تج ری کت وت میں عاشتقان سو لپ کی داستا نکش ووذا ت ری کٹخ نجوت یں عل ماہسق تکاکردارگز یت

13

یا

رن

پائیکاٹ

0 ا ممست عقیر تم نبوت اودابما امت

رت جباری ھا یٰ

ای١‏ ص سے ماب سے ہے عارا یماں ا ہاں والوں ے کییگر ہو کے نکر و ییاں ١‏

زین و آسان کے زرے زرے میں تیرے جلوے ہیں نے پھر دکھا نظر آا اں تٍ٢‏

نہ ہر ہمہ جا ھت ہیں جہاں والے بھھ میں 7 ہیں تا یکاہ سے کہاں را

کہ سب یوں می تھا سے دی اک راز داں را

یہاں نگ و بو گی دحل کا راز واں تر ے غہ کول حر جرا: نہ کوئی ت٠ارداں‏ خر

تی زت معلی ‏ نر تریں سے رن نی کا پت پت روز و شب سے نقہ خواں جا

یو و ف1

ھا میٹریف

وہ دن تھی بب ہو مج ء قمت بھی بھی ہو گی جب سان آکھوں سے طیبہ کی گی ہو گی

می سے فا ماد ساد کی خشبو ے یہ نی ہوا ان کے کوچ سے پلی .ہو گی

میں بی ہو مم رن پھر ے ئل آَیا ساد کے رون پ جب ام ڑم ہو گی خونگی بے علد پہ رگ نیا وو عالم کو 1 کو گا کر خی جب گ زگ پچنی ہو گی رشن وو مرا ہو مم خلت کی گھٹاؤں میں کچھ نا قوم ان کی جس عہ مس ںی ہو گی بر ٹیر یں نیاں ان کی ختار پ وارف تہیں نم 4 ہر علق سی ہٴ" گی ول ظبوری وہ ہفل سے سدا جس میں ترمیں تی ہو گی ء ترف ق عم

ہو ع۰عع] حیڈ_ڈُسے‌ٌٌُپًس۔ٰمےح َُس__٠حًٌٰٗجچجھ‏ جج۰ چجوْٰ٤١عسشجسشوُِو۔ؤوجججٌػجّىٗم‏ بت

رت عجایف ۱

بے لقن ہےکمی رک اا سکاب ٹف ناممول رساات سے برکات وفضائل می تا کوئی اضافہہوگا اور نہکی بےکتاب ال مقر لعنوا نکوچار چان لگا ےگ یکہ می علف صاین علاء و محدشین سے بڈ ےک کول بات ککائی نہ امیر مشال 2 گگداگر کےا سمقکو لکی طرحع ے جو ْ لف نوالوں اورط رج رح کےگکڑوں سےلبری: ہواورفقی کی ا ںگدڑ کی ط رع ہ ےجس میس رع طر کے بیوند گے ہوں شی ےگمداگر ےکشکول کے اجیھوقو انے او رق رک یگمدڑبی کے ایت کپڑڑے کےدبزے ال پردلالم کر تے ہی ںکہبگداگرا مرو ک ےگ رسے مات کک لا ہے۔ اکی رع می رکا ا سکاب می ج بھی کر ں َ یدب بی زگاریی کےتہنشاہوں کے ددوازو نکیا کیک ہے۔ ہاں نیس کے د بے ہو ۓ میکت بچلواو کا موا سال رستنہ سے جت اہ ےس پناوسیدعالمسلی ال علیہ یلم کےتضورٹپی لک کےا ای سکونہ عافیت نخخرت. ا نکی رسوائی ےمجات ٠غا‏ تم بای اع رر ررش ٹرنٹں دامن رمت مل پناہ پاچتا ول اوردالد ین ؛اولاداضباب وابشگا نکی کیا خواہاں ہوں ۔

ہکن ہے مینان اتی رو جا ۓےکراپنےکو شف فا ہے شایدکوئی تیک د لآ دی عبت ے ا ملین ےن می دوائے خکرہ نيت

وصلى الله تعالیٰ علی حبیبه محیں واله وصحیه وسلم

برا العمال اپ کے حا.واتھ رگ صاحب روم والمد و صان رم روم اوردادگی صاحمرومہ مصی: می لکیلائی 0302-172, 0306-5785077

تاب مفت لن کاچ طی بک یاغسٹورد جج ہیڈکوارٹ لا در.- 0300-55

۱ قلطم الصد للہ الزی راد خی ہار لن الوھک ین ران لہ یئ ےی ال یإَهَریھاکل فور رصکل مین راوتح علیھغز بل الق نو کان اراللہین راذاضحَلھ برا سایلا فی البدایڈ والنہایا فبانرا غایة الکنایة ڈالذاری فصاروالسا! الا البی ضا تحت لواء اح ب ثٛا تویسیل علیہ رع للع راصحاہہ ا لیت الزاکیات والتلبات الزانہاتمن ناطرالہلر+ن اماہمدخیلول خذ ریہ وا رايت نايب تراما مه لامورادما لو سال رانم ا آسافرانمدیےاالمرتالسالیا ساوزانا نف میلی بن فجن ۴ن کب الحادث ران اسب النلہ رخرما ش لان ت٣ا‏ راز بای علب سپٹ ٣ن‏ کپ الامارٹ رتا اذہ غریعسا وڈان من خسن ظتہ بن لس لد رلیںالار ححذد راک تی با انل عن لد سافن تاچتہ لسا سال واہرت ل فا ٹا لکالوا ہد ئن تر سان خسار ئل انل می یدیز اف خالت ۰۱ روہ کی سی ررد رو جا ہو ای ہداز ۴نلاذ دو لنمنان الکرام کرک الع ق ہیں ا ہُندالنی لکلٰی الب یں بن لمرا رہ یازین دلرہلدوا ین دش الک الب ال ژں: تعال ریعدوھو عراز زن حم ازد لاف الین سادا مطتدابا لجا سالططاری الحشی النلحاری ا یسانش نکی اقضب لن سلی لا ۂالشیر از الال حسرمان نی ڈالالیڈاازمرۂ یمان نام مزع لن ڈالسلبةکازدکعن ا کے مات الم کے َ ابر برل حوڑے ظط حووم سح پچ ےی 5 فم کرو

پیشفرفررکنز

2 تا

ایٹریل مم

ا ا22 متا ویو دی یرک فشہدبان..ملانا خسم سیل ائن/ہنپ سس نویلا ۔ ہلفللر ہش ...و د[لیل : لابقا ودآبلییوۂ س96 ٤‏ 1 :.) :نمی کاو ری وفات قد یسل حل نہسادۂ الا لیف ف9ت السرم الس وة دا۷لابرة بسبد امام الس درا سے البائة د امقیاز ا ااقیاںں النمتد اضف ات مامداشق ہل ۔ .×× لا جر سب تقلیں۔ ...کات ...یرام ......+30ککر::ل...... فقط نال الہ می ج لاٹ یرک سه سہیل الیلماء الباملت

الک رب دو انکر 9 ئ2 سک رج لام ۷ار - الرٹس

ا ست

شمرعلاب الد بن سیری سے پر اک لمت پاسیاں شم ہے ۴ سے ہر اک بر و جواں شخ پوت کا

وو کےعلم نے میدان ے دوڑایا ”نھرزے کو ےت شماہ نو کو گراں شم وت کا

دا جس کی عگری تی برق ین کر جان ھرذا پہ خا کا خر وہ مق ںاخ ہے 6

رین (53) بش پی ترک جب شح خوت کی ھا بواشنات ”'ھر کارواں“ 2 نوت کا

چوتقر(74) یش پچ تحریک جب قوئی اجکی کی را جا تھا مر تارواں شخخم جوت ک۷

وو یر چاو و مت وہ پازی یراں کا تھا انی ذات ہل وہ کارواں تم نوت کا

مھ بے ریا جس نے بنا ڈالی ”فدیان“ کی ذہ صن ا عغا از مان خحخ ہے ۴

پھوٹڈلٗچس[چھکک و جچھوشساوسیسچ ھا

رتو : ام مصطفی پیل کی خطمتوں کے رو من لو گمہارا کیم سے سب رایگاں خ نوت کا زی می ملا سا وور زیم مصضلی تا کا ہو دی سا ذدائی ہو م٠‏ ہں خشخ نیت

مرا واعظان ہل وا کو سد و

ہوم سے کم نہ اک ییاں حم خوت ١‏

21 پا رھت سے یدن گے وس ہین سعیدی کو بنا دے لفہ خویں شخ نوت کا

مع نو

رو ۱ پارون ال شید(روزنام 2 گ')

قد وخ و تک ابمیت

ھرزاظلام اج قاد بای گی بجھوٹی وت پر بجٹ ہو تے ایک صدیی ہون ےکوی ۔ اب ال چٹ کے تما مو منوراورآکار ہو یھ ۔ اب اگ رکوئی دئی اندھا ہو ا کا کیاعلاع ودنہ جا کا سوال ہہ ہ ےکک یاکوئی چٹ ہراپنے عہد کے سام راج کا شٹاخواں ہوا ہے ۔نسوالی صرف اتا سای ہسوال بھی ےک ہآنری: نی استعار نے مر ذ ایس ریت یکیو کی ۔ اس بدنشل ؛ بے اصسل اورک سوادد یکی ؟ .اس ل ےکراستعارکوالش ایما نکی حمبیت وظیرت سےخطرہ دن تھا جھ چھارکڈل میں مکل ہولی اور پپاڑ و ںکو کائتی ے۔ ْ بی فبیلہ اگ ربز کا سب ے ہڈا مل ھا اوران سے محجات عاص لکرنے کے لے ء ملمافو ںکی دی بی تک مات کر نے کے لئ شا ران یہکودوسرکی چیزوں کے علا دای می وت ما زگازشی ۔اگ را دیانی ٹون ےکنظراندا کر دیاجا جا جی اک نہ بکوبندے اورخداکاذ ال معا یق ارد ہے والا انکر :کی طبقہ الو مکرح ےق ا کان ہکیائکتا؟ تم وت کے وط رانداکرنۓکا مطلب ہہ ہ ےک پاکستان کے پگ بی لہ امت مسلمہ کے چرم بلا ککر دی وا ل ےکن ریو لکرلیاجاے ۔ امت نے ای کین یکواور اتعارکی حاشی برداریککرنے والی ذو یتکو برداش تک رلیا تو وہ ال طرع کے دوس رتو کو ھی برداش تکرنے پرآمادہ ہو جا ۓگ ۔ دہ یرت دوحبیت جوم ہو جات گی ۔د داق٠‏ شناخت جخصیت اور چا نکھودر گی اورکا رجات مٹش ا لکاکوئی جوا هی باقی در گا- اسلا مکی سماری ئمارتأتم وت پراستوار ہے ۔تاز یں فرش ےننیں اترے ےرگ ار کے مکی کینوں نے اکا پغامابوالھا ھپ از ہاانےسناازا نک می ڑج أ گی ہو

ری

یں راف یکیت٦لیم‏ اددرہخمائی کش تاریو ںکوزندوگاڑ دہ وانے سی حیدانو درختو کی طائظتکر نے گے_ا ٹیا کے ین مارک اونمونشل ےشن پک خاندانکا محتزم مقر تہرا۔ پڈڑدی اور رش دا رکاج ال ہوا۔ اجنبیوں اورمسا رو کی جات ! کی ذمددارگ قرار ال بندوں کےتقوقی ءال کےتقذ قکی رح معقراورلا زم ہگ ۃ جنہوں نے تی مکوا زایا اورآ شکارکیا کہ خداکی بارگاہئٹش ذدہبرابرنگی او ذدہبرابر ہ جدلہدیا جایگا۔انسانی زنرگیو ںکااتترام انھی نے ات ف ما یااورالڈ ےم سے اس کے بندا آشناکیاکہ ایک انسا ن ئک تمام بی فور انسان ک ےی کے متراوف اور ایک مع موم چا تفاظت تما مآ می کی اظت کےمترارف ے۔

ای کےقارکرد دجن سور نےکر ددسیاقوام نے وشت ت سے جات عاگل شہرآباد ہو ہ مددسے اور جامعات وجود یی لآ یں ۔ سای تحقیقات کے دروازے کل حنتکواکرام عاصل ہدا۔ ال کی ز مین پرکوئی پش سان سکیس ایاج سک یکر دن پر اللہ ک ےآ رط لکااصان ۓےہو-

اک رکوی نی ایک ارت کےکینکھڑوں ستونوں میں سے ایک ستو نگر دیناچاے٭ کے یچ بنلرگاان خداپناہ پاتے جہوں تاس کے سات کیا سلو ککیا جا ےگا؟ پچ رو وکس سلڑا ”تن ہ ےہ جوا دمیت اور تی بکی عالگی شارت کے دوستوفوں میں ےا ستو نکو سا و پرتطا “۔؟ اور بردوسقون با ہم بجڑے ہیں ۔ مرا کی شب ان کے درمیان دوکمانوں ےبھ اکم فاصلیتھااورسدرۃ ای ے کے چب رائیل اشن کے پر جلت ے۔

آد لکیاے؟ :اش رااورجلدبازآرمزادگیاے؟ غرا نات می وہک یامی رکتا۔ اگرو:جانورو ںکیطر خع شف کھانے ہے واوڈ ھن اوران صطل بکر نے می ڈگار سے ۔ کردا از کی دارئی صداقو ںکائہ پا نی اوراگردوان کے لآ مادء ان یں _

بھ بت رکوکیاخ رک حضرت ابر میم علیرالسلا مک تقام مرج ہکیا ہے لن ق رآن جید

رت

ار ا نکا ذکرکرتا ہے اور رما زس بپڑ ھے جانے وانے ددودیی ا نککاحوالہدیا اتا ے۔قار یکا زین سوا لکرتا ےنا نکاوع فکیا تھاء ینس نے یں الہ کے دوہ مت( شیل۱ لگ کامقامعطا کیا قآن بمیدارشاوفر باج ے۔ کادت اِلرَا متا عَنْقًا

رای سو تھے۔ شک وش ولیدہ خی ادد دہ نی نا تھادانٹورو ںکومپارک ہ۔اسلا مکی ٹمارت لقن ؛ مان اورمسوئی پاسقوار ہے۔ الہ پہایمان+اس کے فرشتقوں اور نییوں پرایمان لوم خر ت پغ٘ان۔ بیخنزل مراانگ جا دالاسدرعاءچا اوشئی راسترے۔۔ ار کنیا ت موب ہےتذاس دا ہہ یلت او رق ا لکانجات یل ایک( ندہاا نکا رح لیے اوراپ اکرداراداکر نے کےآ رز ومن ہوتو ایک وا 2 قد واو رب اشن ایا رکرو اوراگر رٹ ا شائی ہدج راوج کی طرع ہوہ چخداودپرنرکی طرحع عاشی ہہ گی اور ھی ہو ”دانشروں' کے سا خیالا ت اور شک ککی وادیوں می پت پھر لکن برقم شرکے میران مع گئ جاؤ گے تمہارے پا طلالی کے سوا دنہ ہوگا اور یکسا پا کرد ین ولا ام2 ے۔

ماجنا کنزالا یمان 2009ء

جو مل بر ۳ہ

عاخظظا مامت نی سعیری

حر تم بوت میں عاشنقان رسلا کی دامتتان یف

ت ری نتم نبوت 1983ء یس جب قنم ذ ایت نے سرُٹھاا مت سل میم رز قادیالٰ گا ذدیت سے رص پپکار ہوئی ‏ اور جب تقاضا ۓعشق عبت بڑھتا ےت مت رسو لٹپ ا دل و ان یی اکر میدانٹل ں٣‏ جائی ہے اود نشی دحبت اوران رددفا کی دو داستانیں' تم ہونی ہیں ہےر کودان تار یں ا سکیاشی لا شک نامشکل ہوچائی ہے۔ سرز ین ین پاہمومء ناک لاہود بای ای بہت کی بادوں اورداستانوں کے اٹ قوش شبت ہیں ہآ مرک یادوں کے لی منظ میس پیا نکرام مار عظقام اورعلا رات کے علادہ چچ اوڑھ ہم ردور٘یں ‏ مزدوروتا جر امی روف ی ببھیشائل ہیں۔ تمالا مت حخرت علا ‏ گرا تال رم لعل کی بردستکوششوں سے مرزائیوں کے دو ںگرد و اد یالی مرذائوں اورلا ہورگ مزا و ںکوائن ایت اسلام سے کال دی اگیااور یا ون ما پگ یکو قاد ال الا ہورگ اش نکارکن یس بن سکنا۔ ایک دن اش ن کا لی عام ہو پا تھا +علا مج اقبا لا جلا کیاصدارت فر مار ہے تھے ۔سات ہی میاں امیرالد بن ٹیش ت٠‏ اچ تک علا مرگ نظ را ےکری پر ٹیش لا ہوری مرذائی اکم رذ التقوب یک پر پڑکیءعلامہ چوک اھ شد یدض کی حالت می سکرسی ےاج رکنڑے ہو اورکرجدارآواز یش جا ری نکو خاطبکر تے ہوتے ڈاکٹرم رذ الیقوب بی ککیطرف اگ یکااشا وکیا کین گے۔ ”کے در رکنا ا ا ٹ۰ کو ا یہاں ےاثال دوەمیری غیرت یےگوا ون ںکرحک کہ یر ےآ تاکرممنکی خم ور ت کا یش نکی اجلال یس ڈیٹھار ہے اور پھی موجودرہوں۔

رقتق

علامہصاحب رم ال عل یکا ریفربا نا تھاکہاجلاس میں مل پل ب گنی ڈکٹرمرزالیتقوب پیک علامہ کے ا سخقت اتقساب سے بدتواس ہ گیا اور اتچائی انی کے عالم مٹش اد اھر وین لگا؛ چنا ڈاکٹرمرز لتوب بی کو بیک بٹی دوگزش اجلاس سے نال د گیا شا می نت نبوت علامیججرا ال می ال علیہ کے اس اخسا بک مرزائی مردددپرایبااش کرد ہوا ہو کر ی مکی بات ںکرنے اکاوراسی حالت میں چندروزبح چم پل ہوگیا_ خودقوگ آیاتا

ست ا صدر نی ننٹس لا ہور پا گورٹ نے لا ہور کے نماد بین اود مشا ہی رکوکھانے پہ وکیا حضرت علا یش اقبال ری ال عل یھی مہو تھے انفاقی سے ا ہل می ںجھو نے ى یکا چون خی گی روالد ی بھی بلاشو تآٹکگا۔ جب ماش رسولی' حا جا قبال رحب ال علی“ کی ظا سںکاذب کے حول پر یہی غیرت ایمالی سے علم رشح اقبال رم ال علیہ ہیں رع ہوککیس اورماتے پئشنکن پ ڑج بفو را ھی اورمیز با نکوخاعط بک کےکہا نا صاح بآپ نے بک یاخحض بک یاکہ با غیت نبوت اودئش٠ن‏ رسالت ما بکیگی مگوکیا ہے اور بھی پچ رکیا جار ہا ہوں میں اتل میں ایک ابھی نیس یٹ کت“

کیم فورالمد بن چورکی رم فورا عالا تک با ٹکیا اور دوگیارہ ہوگیاء ال کے بعد میززبان نے علا ‏ یج اتال حم ان علیہ سے معفرد تک اور ہاکمہبیش نے ا کب بلایاتھاء یڈ خودی اگ سآیاھا_ عقیرہ تم نبوت اورقادیا یت

ت ریک کے دوراان ما ہویش ج بکر موی گیا تو اذ ان کے وقت ایک مسلما نکر موی خلاف درز یکر کےآ کے بڑھا بد میں کرادلہ اکبر یکہہیا ایاتھ اگ لگل'خبیرہوگی'“ دوسا آ گے بڑھاءس نےاشھں ان لا اله الا ال کیرک لگ 'خبیرہوگي'ج رصان آ کے بڑھاا۲ نکی لاشوں یرکیٹڑرے ہوک اشھں ات محیں رسول لل7 کہاہککو گی شی ہو

( 418 گیا چوتھا آ نآ کے بڑھا: نوں لاشوں پرکھڑے ہوک رکبای عللی الصلوقۃ کو گی دی ”شبید گیا پانچواں ملا نآ گے بڑعااورحی علی الغلا حکبادہجھی شی رکردیاگیا فی ا بارگیففمسلما لن شیدہ" گے تگراذان پور یکر کےجھوڑی۔ طدارش تگنابں عاشقان پا لظینترا_ (عقیر نت نبوت اورف تق دیا متس 255)

بی ریا نکردیا

شی رجنما مو نا مظفمیی شی کت یں تر ک تح وت مس ای کعورت اپے بی ےکی بادات نےکر دی درواز ہکی طرف جار تھی سان ےت کی آوا زگ ی معلوم کر نے پہ پت جلاک سآ قاۓ نامدار جناب گج رسول الف کی عزت ون مویں کے ل ےلوگ سی جانے شی نکھو نٹ ےگویا کھار ہے پیں بل انل کورت نے معرر تک کے باراتکودالی کر دیااور اپنے کو جلاک رکہا با آ نج کے دن کے لیے مس نے سی ہن تاء جآ قا کی عزت بر تقر بن وگ ردودہینٹوالو۔ ی۲ تہارکی شادیی ال دنیایی فیس با آخرت می کرو ںک اوقہارق باادات ٹس ہش آ قاۓ نامدارن کو مدکوکرو ںکی۔ چا دلوانہ وارشجید ہو جاؤ کہ می ظ رکر کو سک بھی شیدکی ماں ہوں۔ بٹاییاسعادت من دق ات بک هُّ وتئی ماں ک ےمم پہ آ تا نا مد اذ مکی ھزت کے لی ش ہیدہ وگیا۔ جب لا لا گی گول یکاکوگی نان ال سکی پشت یڈ تھا۔س بکولیاں سی پرکھا یں لب کاجذہہ

ت یک کے دودان ایک طالبع مکتایں ل ےکا ار تھا ساٹ رک کےلوگوں پہ گویاں پل رحیچیں ہکتا یں رککرجلو کی طرف بڑھایا نے ٹپ چھایکیاجواب م کہا آن تک پڑھتار ہاہوں ابہ لکرنے جاد ا ہوں۔ جات عیگو یگ یگ رگیاء ولس وا نے نےکر ُٹھای شی کر حگرجدارآواز یم شک ہاک ال مکی ران پرکیوں ماری ے مت مصطفا تپ

رگن

دل میس ہے یہاں د لکوگوکی مار مم قلب وجکرکوسکون نے 7 تنم وت

تح رک می ایک مسلمان دپواندوا رخ وت زندہوباد کےرےسڑکوں پرفگار ات :پوس نے نرک رمیا مارا۔ اس نے ہی تم خبوت زندہ با دکانحرہ لگا ء ولس نے جندوت کیٹ ماراءأس نے پچ نحر:لگایاءدہمارتے ر ہے بیھرے لگا تاد ہاء ولمس نے اُٹھاک رگا کی میں ڈ الا ہیزنموں سے چور چور بھی وت زندہ باد کےنمرےلگار ہے ۔اسےگاڑی ےأ تا رای تق بھی دوہرے نار پا ے,أ سے فو تی عدالت یس لا اگیا۔أس نے عدالت میسآتے ب یٹم نبوت زندوبادکانھرہ ایا تی جسٹ ری ٹن ےکہالک ایک سا لک مزا ءا نے ایک سا لکی زاس نک رپ تم وت زندہ اکا نرہ لاس نے مزا دوسا لکردی ء اس نے پلنحرہ لابا غرضیک ہف تی عدالت جب میں سای پہکئی د یھ اک شی سا لک مزائ نکریھینھرے سے بای لآ رپا توف تی عدالت ت کہا کہ اہر نے اکر ا ںکوگولی مار دوہ اس ن گول کا نا مک نکر لیک شاف تر انہ سے اما نآف کی کیفیت ماہرکردی۔ ررحالت دک وکرعدالت ن ےکہااسے در اکردو۔ یرد اوانہ ہے؛أل نے د )لی کاحھمکنکرپ رن :لیا 'ضشخ وت زندہباؤ“۔(ج ری کت نبدت ازشور شکاشی ری ) توالت رآ نمو ا عبرالضفور ہار وگی

خ عگوبراوال سےتیررٹروں یںگل ئل کے زمراجتمام اتا تی جلسوں :جلوسو ںکا امام ہوا۔ وزسیآباد میں جن لقرآن حضرت علامعبدالخفور ہہراروئی فا ویش نکی قیادت ٹش اتفارخ ربکا ڈکروانے کے لیے ری کی بپڑریی پلک ئیکاکٹھا کوک رٹر بین رو یی او رلوس ڈیا نے کت رضاکار

اتی یگ رفا یاں میٹ لککہ نے والوں میس ایک دس بار+سا لکنا رضامکارشھی تھا أے گاڑی میس یپاک رلایاگیااورمقردومقام بر نے جاک راجاردیاگیا-

رت ات یہ وہ ریہ و سو گاڑئی یس بیٹھ جا اتال بامف جنوگ اود پیا لس طرع براوش تکرو گے پچ نے جواب دیا ری ماں نے جھے نود کے نام پر بان ہونے کے لے کھچا ہے .تم ہیں ٹیل میں بن کیوگگی ںکرےۓ؟ گاڑ یی نے سخرشرد عحکردیاءگاڑی چتدگز بجی پوس اف رک پھر ےکا خیا لآ یک دداننا لباسفر ط رع نےکر سے وائیں جا تےگا؟ اک ن ےگا ٹی رکوائی ۓےکوواز دیی ؛ سراتھیوں نے یا اک دای اشک ئن نے اب دی پا زدالیان ان ین ارک نو رھ رکھا ہے؟ مہ رعال بدا یں نآیا.( ہل سمن تا اگوائری رپپرٹ) رر رں اک قافلریش میا ففل احرمو چیا شال تھےآپ بہت ئررسیدہتے×د بی جذ سے شحت لا ہود پچ ۔اس وق لا ہوری مایشک لا نگ کا تھا ۔آ پکوگ رفا رکیاگیا.آ پک بڑحابے راس رفص اؤیل کت اہو ْلان وذ او رات ے کھامرےساتھ انا فکیا جاے گان رھاکمیاں صاحب مزا کرا نا اہ ہیں ۔أل نے بےانصائ گیا وجہ پیا ؟ تو فا جھ ےکم عرلوگو ںکوس مال قیرد یکئی ہے۔ بھی ات تما زادگ جاۓے .لک مزادرےکرمیرےساتھانصاف ےی کیاگیا_ فی اض ری نکر اش بدناں ر دورد ہکرت دا ےکر ےی چلاگیاءمیاں صاحب نے أ کی کپ اپچااادراپق تر بای کی قولیت کے_کرانے میینئل اداکر نے گے۔ ااسالہبزرگ تح یک کے دوران دی درواز و سے روز انی سےعص تک جلوں کے ے فو ان کے سینو ںکوگولیوں ےچ کر اوسلمان نامول دسالت پت بان ہوتے جاتے سور روب ہ نے قحب تھاک۔ایک ای سالہبنرگ اپ پا الین ہت ےکوکند سے پرٹھ ےل

رس یتر او وت زندہ با وکانتر بن کیا مگولیا ںآ میں اوردوں کے ہینوں سے پارجیئیں- (مض ختیائی اکوائری رپپرٹ) کل طیپکاورد یف کے دوران فدائیا نم وت جا نپضیی بر رکوکرمیدانمل میں ڈنے رہے۔ اسلام کا د ال مگ کاخ ء اب لو ننورٹی اورکوینمن ٹف کان کےلباء نےکلاسو کا ایکاٹ کک کے رضا میاروں می شمولیت اغقیا رک ری ۔ پولاس ان سے تا کا خطردمول لینننی چا ہت تھی .کی مقامات بر اہلاس پرچقراورانپٹیں برسائیگکیں فو کےایک دسہیخشت با رگا٠‏ جواب می ا نے فا ئن ککردیی شور شکاشمیری نے ان عالاتکا تم دیرمنظ زیو ںکھا- ”رام نے دا ہوررمیس از ہوم مال روڈ پاٹ یآگھؤں سے یکا کہ 158 سے 22 سا لکی عم رکےنو جوانو ں کا 1یرس جاوں کل طیکادردکرتے ہو جار ہاتھا۔ دو ایک یی سپ رنٹزڈٹف پا کیک عیب الہ کیم بی دارنگ کے بخیرفا ئن گکاہف بنا۔آٹھ وں نو جوان شبید ہو گئے ان لاشو ںکو میک عبیب اللہ نے اپ اتوں سے ٹرکوں میں اس طرح بچھیگوایا جس طرح جانورشکار سے جاتے ہیں۔میفظارہانچائی درد ناک تھا۔ تج ری کٹخ وت ) یی ابی پیفردوںشاہ لا ور چھا لی یش ایک قاد بای اض رن ےگولیو کی بو چا کی نکو یکھانے والوں نے انتائی اتقامت اورکرداری جنگ یکاشموت دی( طغٹرےقوین گرازی رپرٹ) * ای رینم وت کے دوران ڈئی ایس پیافردوں شاہ نے ایک رضا کا رکاپ پاں ےٹھوکرمس مارمیں+ اس رض ککارنے گے یق رآن ید ڈال رکھاتھا ٹھوکروں سے فر دوس شاہ نے ق رن یش ہی دکردبااو ای لسن ےکی شہیدکردیا-

رت

چندیکنٹوں مس ریرج لکیہ کک ط رآ پور ےشمرہ پیلک جس سے پپلیس کےخلاف پامھوم اورفردوں شاء کے خلاف پاقوی خینو وفضب اورنفرت کے جذ بات اگ آنٹے۔ لوک پیل باین تھے ہاب واقنہ نے الن کے یبا تک شدرت اورزت می ×زید اضافکر دیاء چنا نچ ای روز ایک پر جوشل جوم نے فردوں شا ہو لکردیا۔ ال کےشسم یہ باون زنھوں کے نشان تھ ۔ا سکا بقل اور سماتھیوں ے راملیں بھی انس جم ے جن لی ںا (ماونامہکنزال یمان :لا ہور یم جو نہر 2009) می راپیررسول اڈنا رقربان

3 کن بک اپ نے عر ور تی لس نے پورے ملک میں پکڑ کرو غک ری تی ۔امیران :امو مم کر مال کے لی ےجلیس نا کاٹ ہککیں۔ ڑے بڑے مریرانوں میں خاردارتا رڈ اکر مایشی شی قائم نئیں۔ لو گ فلت رسو لاف سے لیے پرواندوار سے پہ گولیا ںکھاکر نت کےراہی ہورے تھ_

یھ آ بای ٹاش وت کے پہواوں کے اک بہت بڑے وم ایک ار وت بڑاجذ بای خطاب فرمار ہے تھے مسودک یگیل رکی میس عو تی کو ٹیشیتیں جوستتل ے مور غکواکھوانے کے ل ےآ یی سک ج ب یم لی ٹپ کی عزت دنا موں کے خونن سے ے پگاراگیانذ صرف مردی لیک لبیک کے ہوۓ ا لیو رت بھ یگھ ریا چھوزک 1یس ایک عورت شی اورکہا۔'* مولاناصاحب یبر پا زنک یکاسب ےت اس رای می انھابٹاے۔ اسے میر ےآ قاد و لامک رلک یآبر دیق با نکردیں۔“

یک کرد بہادرگورت ا لے پاں دا بس پل پڑکیءماجول یش ایک تیب جذ بای کیفیت

سای جار گافازی ادف فکگرتھھط کمن

نےکل رآ داز لوکوں ےکا اےلوگوال لیکو چائے ٹر ینا ۔أ سے بلا !چنا نچ اس عورتکو لگا ادرمولا: نے اپے قدموں مس ٹیش ہوئے اپنے مضے سےاکلوتے نی ےکی طرف اشارہ

سسہ_سسمیےےسحسسےمسھژٹکسڑسکژشسیییئییجڈ

٤نر‎

کرت ہوتےکہاکہ پا اہب سے پپیلگول میرے سن ےگمز ر ےگ کرای ہے کے سی کوچ گی را شا کتا مافراوکولیا ںکھامیں گے اود جب بی سببتقر ان ہو ای چھر اپے کو نےکر نااورالراوراس کے پیار ے رسو رت با نکرد یناماد با گورت کےجوانےکردیا۔(عخقید نت نوت اورد وقادیاعیت) یکےءٹن یلٹا

اک عاش رسو ل فظ انی ضی لک واقہ یا نگ ےۓ ہو ۓے کی ہیں ایک دن خُ لکا سپا تیآ یا اوھ کہا آ پکودفت یں سپرنٹنڈنٹ صاحب بلار سے ہیں می دشر جس بات دیھا مر دالدہ صا بمع میرک ابی اہن نے بے کےساتقحد جس کی عمراس وت سوایاڈیڑھ سا لکیتحی , ٹیش ہوۓے ہیں ء والدپترسہ جھے د یھت حی شی اور نے سے کال یا ماتھا چو نے گیں, حال احوال پچ چھاءآ نکی آوازک ھکیڑی .یرف ن مو کیا اک دہ ردرق یں جرا بھی جیب رآ یا (نگھموں می ںآنسوتیرنے گے یدک کسی رنٹنڈنف ن ےکہااماں گآ پ دوری ہیں ءٹیے سے یں (ایک فارم بڑھاتے ہو ےراس پر ےج کرد ےق آپ اس ساتھھ لے جا نی ,ابی محانی ہو جا ۓگی میں ای خووکویسنیال در اھ اکہراسے جواب دےگولوالدہ صارنڈ پکر بولیش ڈ سے بط کہا کی محانی ابی دس نی بھی ہو ںو حض وڈ کی مزت پقربا نکردوں؟“

برارونا ٹوشفٹٹت باددگی ہے۔ یک نکر رنڈ ف شر مند ہہ وگیااورمیراسیییٹھٹاہھگیا 7 ری کٹخ خوت1953ء) ما اص

ض کم میں ماتی نام صعفی بڑ شی ماش رسولأ تھے حاتی صاحب کے ہاں ایک اد ای آیاءاس نآ تا نا دا کی شان مم سکمتاتیکاا ا بکیا۔آ پ کوٹ شآمگیاء تر لی اود ا سیکا کا تما مگرد یا ءا کی زان گال یکر ےک یکر تے جاتے تھے او کے جباتے

رت٤‏ ےکہ بد نت اس ذبان سےتذ نے میر ےآ کر کی بین کا اکا بکی تھا۔ جس ون

پوس وانے ا نکوگر ارک کےگھ سے تھا ہکردنکی لے ارہ تھے۔ ا سے پپکی رات آتا کر یی ای اد کوخواب می زیارت+وئی کپ نے فر ۳ایک ش کی خیل م مرا مہما نآ رہا ہے۔ ا ںکاخیال رکناء چنا جیلو مکر کے اک پا بی ن ےکھانا اود دمگرضروریا کا اہتمامکیا۔ دوت ہبلہ ایک م جار وت خوا جن نھا کی رم ال علیہ نے فر ایا ک:

مرذا ا دیانی کے جا نینم زائموداجدکووکوت دا ہو ںکہ دواگیر

ریف سآ می بھی دی سے وہاں حاض ہو جا نگا. خواغ ریب

نکی بجی مر زا رےساتمککاہواوداپتی ہیقت کےتر بے جھ

پآ مائۓ اود جب وہ ای مار کرام تآز ما و جھوکواچازت وگ

جا ۓےکش صرفِ پیکہویں:اے فدا ال مرذ اک ایت کے نے ای

صداقت کا پرکراددہم شی الن بقل یش سے جویھوٹا ہوائ سکواسی وت

اورا یہلا ککررے۔'“

ارس کے حدم زائمودکواعازت دگ جا کرد اپے الفاظا می جورع

چا ےکرے۔آیکفظدکی عدت مدکی جائۓ ؛] دوفو ںآرمیوں مم

مھ کے اندداس دعا کا ظا ہونا چا بے۔ ھرزاد کے لاک

شدر تگیا تا شا دکعالی ہے کون م٣‏ ہے اورکون زنرە رتا ہے۔مرداگی

ہے :صداات ہے ےڈا ںآز مل کی سی رکرو یہاں ای یکذ کے اندر

سب وآ جا ےگا ڈر دنت ویر ے پا اُڈانے والا ذ ہر یاگٹس نہ

ہوگی۔ نہ می تمکو دیکھوں ما جس سے مکو اندیفہ ہد مم می

7 25 > چنا ٹائزم کے ذر یچ مار ڈالا۔ یتم سے وی فدم کے فا گے پرتہاری رف سے ہگ کین بدخوا کی جاب رر کر کےکھڑرارہو ںگا- اگرن مکو مال متفورہوتھ رج الاو لکیمچھئی تار کو اپنے جوار یی ںکانلے کر اچم رش ری فآ جا اوس بی ای جماعت کے سات ھ7 اور ٹم ال کیا آ جا ںگا۔ حدم بھی میرے پا کا زومر ۓےکوکیڑے ہون ےکی اجازت نہ وگ اکٹ مکواند یق ہوکبیر ےآ دی تم پر لکر سے مارڈالیں گے۔ گوریمنٹ سے اجازت لین اراتا مکرنا یی سبتہارے ذ مہ ہوک اور مکو باضاطدای کک مد یا پڈ ےگ یکراگ رٹ سآ مرکیا نظ میرے وارٹ صن انی پرخو نک دوگ نہک سی گے خرس رکارکواس میں ڈنل دی ےکا اخقیار ہھگا۔ا کی یت یی لپھی آپنے دارٹوں سےس رکا ریس دا لکرادو ںگا-۔ دیھوبہ تآسمان بجٹ ہے۔ بہت جلد ھی ہندوستا نکی ایک موب تنم ہوجا ےگیا۔ جوقہارے وجود سے پیدا ہو ہے+اس می درگ زرکرو ایا موق نیت ےآیاکرتا ہے۔دم ینرک رواورف راس وو تکقو لکرلو_ جب نم اس اراددے اجی رش ری فآ ت2 ابٹی والد وصاح ہے دود ٹواکر آنا اورر یو ےکی سے ای کگاٹڑکی کا دوس تکرا لین ٹس میں تہاری اپنی لا دوانہہو کے اود یز اپتی اہلیرصانہ سے ہب رکھی محا فک رالینا اور قادیا نکواپنے واللدصاح بک قب ریت ذرا فور سے د سیآ نا کہ پوت مکو زندگی ٹس دودرودیوارد ایب شرہوں کے اورضرورت ےک وصیت نامگ یگ لکرر ینا اوران کے مت ایی ےکر کے27۔ بیس ال وا ےکا ہو ںکہ مھ اپنے بن ہونے اور ہارے مرنے پہ پوداشن

ہے۔ااس کے علادہ چو اود جھ با تچگی ہیں ج نکو جات ہوں یا رٹ لاؾ رھ دالا خداجا تا ےج نکو یا نکر خودستائی ہے۔ ال بیام نگ کا جلدی چا والا-۔

(خوایشن نظائی رسالہ'ظاما لغ '')

صوثی ایاز مان نیا زکی رم الظعلیر تی و وت کے یم میارصونی ایا خان نیازی ( رم ال علیہ ) ایک انٹرولو فرماتے ہیں کہ ج بت ری مخ نو تکی اعصلیت سے شناسائی ہوگی ف ھم نے فقا ایت خلاف اعلان چہاوکردیاش وت کےگنوان سے چیک ہوئے :میا نول او رگرد ودای ہم اس من کو وط او طف کیا لع انظامینے وفع 3:444 زکردی۔ رشع ما فوا یک کی د 14 تی ہم نے بردفدتڑئی ٹیل گے :یل مم ذڈ یی نمی من ےآیااوراس نے نمی کہ اک ات مان چا ہیں ای رہاکردیے ہیں چم ن کہ کہ ہمد کی چا تج نقادیانوا کے پیر وجود گی جاہتے ہیں ۔ گی دہ کر دی باہر جاک بچھردفعہ 144 تذڑیں گے نارےساقی اک انس مرادی رمفماان دلبراورصاحب نیرت انسان تھا۔ اس نے مار سعاتھ دیا جم نے اپنے اس موقف پر احتامت اخقتیارک لی ۔ڈکیکیامیاں وا یگولڑوشریف ے مر یدتھا ںا کہاتم دفعہ 14ت ڑویاننڑدچلو با رجا( تم آزادہو )می تم وت کے ملہ

قادیانیو ںکاظراقدارکیول بوں-

صول ایاز خان خیازیی ہی فرباتے ہیں ء ایک مرحم جن ما کک قیدہ بت سے لطف انروز ہوتے رہے۔اںگرارک سےینسل کے اندر جوللف او وی آ زادگ میں حاصل یس ہوا۔ جے میرے ایک دوست نے میریی موشی کے بیرخوددی اپنے طود رکش لک کے ز پاکرادیا۔ لہ میرے دوس ر ےک ای می ار ای کے چھدروڈیل روز بعدیی ٹیل می رہے۔اپقدہاک ٹا کیا ہجاۓ ھکد ہوا اور نے اپ ال سای سے کل یک کہم سی دنیادی خوش ےے

رمت٤‏ لیو سکیا تھا ۔ک رٹ نے عناخت پر اکروایا ہے می سذ حضو رت یکرت کے سلطے میں تِل میا تھا یشر نگ یکاباعح نی گیالمدلیعزت ادروقارکاباعٹ ے- ۱ صاتزادوسیدشٹض بن رم ال علی(اہنا سو تے ای جوان 2002ء انٹردارصوی ایازخان یازی) خیب اسلام اپ ری کٹ نبوت صاجزاد دی بسن اپنے ایک خطاب مم فرراتے ہیں۔ ای کجتوں پکولیو ںکی بوچھاڑ ہم پھکڑ یو ںکی وکا ہش جیلو ںکی ٹک دج رک گوڑیوں یس ج ب کک جان باقی ہے اور مہ یس ذزباان ہے۔ بی مطالبہ سے جائیں گ کہ ھرذائیو ںکوافلی تق اردواورغ را کووزارت سےاتاردو۔(خطاب صا جج زا ادویوفیس سن شا رقدالڈعلے) مولانا شا امو راٹی رم ال عل یکا جھاب ایک م رجہ 1974 ءک فیک حم نبوت کے دورا نپھٹو نے مولا نا شا افو رای س کہا اگر کی ہی من ایل ضکروں ت ت مک راکرد ےآپ نے برجتجاب دیا؟ ”وع یکروںگا جومیرے جدامرححضرت ستید نا صد لی اکرش ال تھا لی عنرنے نگ بیمامہ می لمسیل ہک اب کے سات کیا تھا۔ میک نکرذ دالفقا کی وکا رگ زرد+وگیا۔' (ماہنا فافش نبوت اگست 2043ء لا ہور)

وو و وت

4282 حافظدامان تی سیر

تح ری کٹ نبوت یں علا عاہسقّ تک کردا زیت یں وت 1983 میس جب علومت نگل سکم لک پر ال نج ری ککوتشددا طاقت کے زور برک ےکا فیصلہکیاء 24ف وری 26٤‏ فردکی 1953 ورام با غکرارچی مت روز نی الشان یلیگ مل کےصدرعلام اہوال سنا تسگا جھرقادرکی صاحب رحرۃ ال لی زمیصدارت عق ہوۓے جس می تج یک سے وابستۃ صاجزاد وس فی اش نآ لومہارشرے مول ندال برای می ؛مولا نا عبدال ریم جو ہ ھی :سی عطاءالشاہ بای ہمو لا نا اخ م کیہ ماس رجا رج الد بین انصارگی ہم ولا نا لال ین انز نے شرک تک ء ان تام جلموں مخمرر بین نے اپنے مطالبات پرریشنی ڈالی اورقکومت کے مالیو لگ نکر داراو رر ٹ ےکا ذک کیا:۱ ۱ ججلسوں می بزرارو کی تحد اد فدایا نپ وت نے شرک تکی- 6 ھرودٹیکی ددمیالی را تکوکرارتی می سحلومت ن جک رکمل ( جومقلف مسا لک کےعلاءکے با بھی اشناک ےگ یکم وت 1953 ءیش قائم ہوئی ) کےصدرتفرت علا ابد نات سی رج اتھرتماددکی اور 9 رجنمائؤ ںکوجشن میں صا جزا ادوٹیض انس نآلو پاروی:مولا عبدالیا بداو ٹیہ مولا نا عبدال رم جھ ہی تی رعطا ال شاہ بفارکی+ لال ین اخ دغیر :شال ےگ رف رکرلاا ری ک کو کی قا ین یرد مکردیا۔ صاتزا ادوافقا سن فی لآیادی رمالل لی آپاپن یآ پش زندگی نل طرازہیں۔ ”نی نےکئی علا ءکراممکودیھا وخنلف علاقوں ےنم وت کے منقدیس نام پگ رخ ہو آے ہو تھینکرا نکی حالت قائل رت بھی اور لان افسو بھی بشھنڈر یآ ںبھرتے ؛آضسو بہاتے ء ہا ہات ۓےکمرتے مت کیک چچلانے والو کو برا چھلا سے اورر کی کے لیے سور: لوست'

٤ر‎

فیفک رت ۔ایک رات می نے ان غلاء کے ساس ےکھٹرے ہوک رک رسیکی۔

اے مرے قیل کے بہادد ساتیو! اسلام کے جاناز غازیو نا مویں رسمالت کے ہر خردش ہیاہدوادردیننصضىفلل کے رہنمائؤ اش رسمالت و شتم وت کے پروافوں چم لیک دین اسلا مکی مظمت جن وصداق تک ام وم و ین نو تکی طفاظ تکی ماعط رق دہوۓ نمیرے ددستوا قد خانہ ہےء یٹیل ہے٤‏ یر مصائب: ملا ت!احم نے بت اکن ے اوردرد نکی فکام رکز ےءوصددمت ١ے‏ د نگمز اروا ایت گی ےسب پھھبرداش تکرواورکزم وا تقلال ے یلک ٹوا آہ ںھرےککرولم میں ڈو بے رب اورو شی کرنے سے ہی ٹیس ل گی اپے اسلا فک ذنرکیوں پنظ رکرو ء ان کش مکارناموں پرڈگاڈالواوران کے حوصل وج رت مد یو ںکا مطال یو ان پک ےکے مطالم ڈھاۓ گر دوغابت قم ر ہے٠‏ ان پشلم دم کے پہاڑنوڑے ےگ رانہوں نے ا کک نکی اورا نکوجر وتشددکی بی بیس چپ ام یالجن انہوں نے حوصلں پارا۔'

حفرت امام ارب نشل رج ال علیہ پکوڑے برساتۓ گے

رت امام شا تی رض ال علیکاسات سال قیل میں رھاگیا-

حضرت امام ما لیک رع ال علیگوجلارٹ نگیاگیا-

او رتضرت تناما مپأشمم ابوضیف رس لعل کا جناز دشیل ےلگا-

7 یل نت مع کرات اچچ ےکودتے اورمست لندر کےنہرے گا ای بے کائ ذدضہ ہمارے پیل جوان با ز جاک رک ایی مگ ےکہ یہ ہیں

ہمارے نی رجنما اورعلا ءکرام جو بزدلی اور بے حوصلہ ہیں ےکور اور ڈد پک ہیں۔“ علامراہوالحسنات سٹشھ رام درئی رحمۃ ال علیہ آپ نگل اگل کےصدراورگرا نکی حثیت ےتیل ہایت عبرداعتتقامت' ما ردکیا۔ اپنے فو اپچنے تقیقت دو جوخیرچھ لی مک رمیں ہین کےم ول نا مود ات کے شحم ندت 1953ء علام ابد نات سی اجھقادر یک یق تکااختزا فکرتے ہے ہیں۔ لح بلنز پا ہیں الیی ہیں جوخودکوشرت سے دو رکے ہیں ء دنیا ا نکی خ بیدں ےکا حقہواقفی ٹن صتی زیادہ تقر جب وانے لوگ ان پذرگو ںکی عم تکو جات ہیں رقوام بے تج ہوتے ہیں ان بلند پایے نضرات میں حطرت مولا نا ابو اسنا ت سی مھ ات دا درکی ( خطی ب مسر وزمیخان )کا ا کرای سرذہرستظ رآ ےگا ۔'' آ پگ اگ فیاری کے بعت ری کک قیاد تآپ کے اکلوتے بے مولا نا سی یل ۱ ا ری اورمیا لمت مو لا نا عبد اتا رخان جیا زئی نے سچالی ءامی دوران شیل می لآ بکوباطلا یکعلا ہیل اجھقا درک کوک رارکر گیا او تی عدالت نے ای مزاے موت نا ےل ۲ل وت کےم رکز نی رہنمامول نات مظفی شس کت ہیں۔ آ پک ایک دن اچاضک اتک ہے الا ٹ یک موا ناس نیل اص تاوری ( خیب جروز مان (اہور ) کو مال لا وت نے ان یکی سزامٹا داے۔اپے اوت بے کے بارے یس دو فرسا خی رک نکوچرے گر گئےاوارعت کی ۱ال بی امرے بی ےکی قربالی متلورف ا“ موا نا نیل اھر در یکو ای اورشہاد تکی پر مو لا نال وسا یا کاب تح رک

رئا آ شقم نیت 1983 می مول :حا گموداورماسٹرتارع الد بن انصارکی کے جوانے س ےکھت ہیں یا مس بکورت ہوگ یکر ول گا انی ری لکک نآیا مولانا نے ئھی ڈکرک نگم ےھ کوئی اطلا نی سآئی :تو مو سکیل پکیاگزری ”بل زند ھی ہے پانی سگرعلامہ وا نات تیکھبراتے ہیں دا لگ یوک رآ نس بہاتے ہیں اورتہا نکی ز پان پر مولا نا یل اھ قادر یکا نکر ہآ تا ہے۔ ہم سب اس صورتھا لکو کوک جب ران تے ححضرت مولا نا عطاء ال شا بفارانے بار پا ف رم کہاگ رمیرےساتح ییواقنپٹ آ تن خداجانے می راکیاحال ہوتابگ رچھتی علامہاہوالسنات قادرئی پذ بڑئیکوہ دق رخخصیت خایت ہہوۓے ‏ مولا نام یں بی ےکر خوش کپیاں اڈ ات ایک بیٹےک جج دوطا کف مم مصروف ر ہت ہیں ال شےصبراو وص عطاکر ےتیل طانتھردفردرکا متا یل یہاں بڑے بڈولں کے پاؤں گنگ جات ہیں مولا اکٹ کیاکر تے تھے کرش کے نام بآ کک دوٹیا ں تق ڑتے ر ہے اس کے نا مکی لاج رک ےکا و تآیاکبرانا کیسا نک رای نوننیں ہوثی جا ہے ہم نے مولا وص ردا متام ت کا پا اورشرافت دش کا پیر نکمونہپایا۔“ آپفرماتے' چھئی بات نیک ےیل می رااکلوتا نا ے تھے اس سے بے بنا حبت ہےاک لی ےکی ا کا اپ ہوں اود میں ہی ا کی مال ہو ؛کیوکگ علا یل امقادد کی والدودفات پا گنی یو بھی اولاد سے ےب نیس ہولی بگراس مقام پبعب رک سواہوگ یکیا کت ہے پچ راس تی ککام ںیل قرب بھی ہوا ےا سعادت دار بی ہے د ویو ماؤں سے لف تر تے جو کارھ يف ک یآ جرو شید ہوۓ ان می شی لکھی ےو مر ے ےھ کی بات ہےالہ ماد ی تقر با یکول فرماے۔ ناب مفلفعی شی بیا نکر تے ہیں۔ 2نس بمت اوداولوالھزیی سے علامہ اہو نات نے قد خانہ می دنگمزارے ا کی شا لکنی یہتمشکل سے نا زم می پلا ہوا انسان لاکھوں انمانوں کے ولو تا پاشاء مو لکاشنشا ہگ رحبت رسو نے امتخان چاہانذ بے درگ قیدو

یصو تو ںکوبرداش تےکر نے کے لے تار گیا ادرشان ے قی کال کشا ب نگیاءکیا ما

جو ےھٹکا ہ اشن سے بتدار ‏ ار کیا ہیل یآ پکاہترن نف تر و کری مکی رک تھا.( وی رصنات کے نام سے وقیاب ہے کی مر قی می کانے او بہت استقامت کے ساتھقیدو بنرکی صصموجیں بر داش تکیں جن کے باع فآ پکیا٤حت‏ پر ڑا

تر کشم وت 1983ء کے دوران ایک قاط انداز ے کے مطابتی دس زار شبید رارو ںگرفر اود لاتقدادرمسلما نت رک سے متاثز ہوئے ء لا ہورشہ ری ںکر فو ناغز ہونے کے بادجودہڑتال مظا ہرےاودرضا یارو ںکگرقناریاں جارشج ۔عالات دن بد ال دے پاہ ر ہور ہے تھے ۔گھڑتے وو عالا تکو دج ےگرحکومت نے 6ر5 1953ء سماڑھ وس بے" لا ہورٹیش مارڑل لا ناف ذکردیا۔ یمام لاء بت زدئی تھا۔ چوصرف لا ہورک محدددتھا اورائسں کے نفاذکا مقص دش ری کت نبو کچل تھا لیکن قابل جار ہ ےکہیہ مار لاء لگن ےکاعمکابینکا مور واوروزہ پش مکی اجازت کے لقی راس وقت مر تی دفا مج جنزل سندرمرزاے دیاتھا۔

لاہورش رکوفون کے حوال ےکر دیا اود لاہور کے ائریا نر اور چیف اشُل لاء این ریٹریچجر ہزرل نشم خان نے مار کو بای لاءلگاد یا اراس کے ضالبلو ںکی خلاف درز پریزاؤں کے لف تی عدائیس قائ مکردی مال لا ءکےےنغاذ اش ریس فور کی مو جودگی کے پاوجودمولانا سی شی اجقادری ارت “ولا نا عمبدالستار مان خیازئی ءمولانابہاول ال اگ گا جاآت اود ولولہ ی۲ لکوگَی فر نیس آیا۔تج یک کے مرک مد دز نان مم پراروں ملمان موجودہوتے ١‏ وہا لک دشام ولو گی تیر رس ہوجیں اورگرفماربی کے لیے ا نے روانہ سی جاتے۔ ول نیل ا سدقا در (رم اڈ علی)

7 ود18 مار کوسولانا عبدالتتار ان میازیی نے بارنل لاء دقمہ 144 اورکرفو کے

٤تر‎

پاوھدگراریاں دہ کے لے چا ارافرادکی ٹولیاں روا نیش 49 مار کوفو نع نے ودک گجیرے میں نےایا۔ اس وقتہ سی مولا نا سیل اص ہقادری اورموا ا بہاول انی اہی ) کال نیا رعطاءلتی تا بھی کے والد) موجود تھچ نجلیں فورح نے سید یں موجودرضا ارول کے سات کر فارکریا_

موا تل اح ہادری فرماتے می ںکی اندعیریکوٹھڑی می میرے سان سا پچ وڑ میا ما زی نے ےرتا گیا ءساراسماراد نکی ارکھاگیاددرا یق گالیوں سے فواز اگیا۔ یگ وفع ج ب موک د پیا لک شدت سے میرے سے می دردُٹھا تاس مم خیا لآ اکٹ شبجوکا عررہاہو ںگھیی ہو تذ اتی لیلد کےکھا ےکھا الکن دسر ے می ل فیہرنے طام تک اور صا گرا مکی ق انیو ںکانت آگھوں کےسان ےآ گیائیش نے شود ہوک رت کی جن خد اکا قرت کن ےکہاندصرے می ایک ات ھ کے بڑھااورآوا زآگی”شاہ گی مہ لےلو ایک لغافہ ےد کیا جس میں پل اورمٹھائیی ٹس تیران روگ یالکرات مخت پہہرے کے بادچودیے س ب بے بیس کک ےت کیا لیکن میرے د لکو شقن ب وکیا کہ ریقوت جناب خاقم اشن نل کےصدقہ می سکی ہے۔ می ووکپیل اور ٹھائی ین رو زکک استعا لکرتار پا“

آپ فرماتے ہیں' ایک دن ٹس نے ازم وکھرتیل میں ای ری تکا خمالگعاء پچرروون کے بعر+الدصاحب یرف ے جواب موصول ہوگیا یس می ںآپ ن ےھ تھا۔”” بے ىہ جا نکر مے عد افو“ ہواکرتم رج شہادت حاگل ترک کے .لیکن بر جا نکرد لکا الینان پچی ارت نا میں صضف نٹ کی نا لد ہے ہو- مو نا عبداستارخان مازی (رحمۃ الڈعلی)

مو ا ینیل اج تمادری اورمولانا بباول ان تام کےگرفمار ہونے کے بعرمولاتا یراتا ان میازی رم ال نے قیادت سیا لیا بکلوم تونیازى صاحب کی حٹت فو نے سار ے شھرکی کہ یف مک دگی: کہ بر چوکیاں تن مکرد یکئیں لین ان قام

ط44

اقسامات کے باوجھف مو لان نیاز کوک رر ہرگ اوھ مول نیازی اہ کسی ربق سے 9 مار کش رد ہونے والے چیاب ای کےکیشن می نم بوت رر: وین بی یکر کے اکن ا یکو لکن کش کمہ یی ےلین ب مق ے جیا بآ کی کا3 مار جک ہونے دا ا جلال 22 مار تک کے یت کرد گیا اس دوران مولا ننیازی کے خلاف ڈی لیس پی رد شاہ کے اومکومت کےخلاف اناو تکا مق رم ور کرلیاگیا۔

چنا نی مولان ملف مقامات سے ہوتے ہو ےپصورریس اپنے دوست چا فل وین کے یہاچ ارام پذ ہد ےآ پک پردگرا قاکہ مار جکول پز درا ای ا کی اور الال یں شر تک کے اپ پروگرا موی امہ پہنا میں لین شا ففل دین سیا سے لم نے پش کو پک وجودگ یرد دی۔ 22 ار کا یٹ کیمول ای ال روانہوتے پولس ن ےآ پکوآپ کے اتی یی را اہ کے ہمرا وش فقل دن کے کان سے گررکرلیا۔(ج الم حرش بی کی موت مرا۔مداکامجا مد دوک رلک رت حاص لکرتے تے)( کتالپی سلسل مال نم نبوت لا ہوراگست 2043 ار ر7)

مولا ای کے خلاف فی عدالت میس ڈ کی ایس پلف دو شاہ کےا اورعکومت کے خلاف بضاوت کے مقدمہکا آغاز ہوا جس کیکارددائی 26 اپ 1953 ءکوصرف یں دن میں عم لکیگئی اس مقصرےم مولا تپ ردا بات حا کے سے 00 ایک بےکہآپ نے ش کو ولس کےخلاف اکسا یک لس کے کے آھے ہیں ے جانے نپا یج کاو ےئا ےھشصنل ہوکر کی ایس پفردوں شاپ لکردیا۔ (9) آپ پدوسراالزام ریت ارآ پک باخیانہاواشتحال ای تقار کی وج ےواع یی ہد اورانہوں نے تشددا وت بکار یکر ےگ یسا ال سان پچ یس لیےککوم تآپ کومکت کا یت ارد ےکرآپ کخلاف مقدمہ بات قائ مکرلی ہے۔ ا خو دخ قرے اآپ کے خلاف ای کچھ الام عابیت نہ ہونے کے باوجودفوقی عدالت نے چاتہداری کا

سؤسسجچھھمممسسوجّسہجًوئےژچےے ےت

٤تر‎

مظا ‏ روکیاادد 7 می 1953 وآ پکوڈ یی ایس پیافرددش شاہ ک ےگل کے ارام می باعزت برک کرت ہو ۓےقلومت کےغلاف بخاوت کے ارام یس پا یک مزاسناتے ہوتےکہاکتہارل گرون بای کے پنرے میں اس وف تک لڑواکی جاے ج بک ک تہارک موت داي تہ ہو جاۓ میک نک رآپ نے مزاسنانے دائے اکر کہا می دسالا ۓ دا ےکائش می بی لاک جانیں ہو میں ان س ب کور ھن کی ذات یق ربا نکر یا“

آپ نے بےقوف ڈ تھ وارنٹف پر ضتےطاکر د ےا کے بد پکو پا یی کڑھڑیہیں خ لکردیاگیا۔مولانا عمبداتار نان نیا زی 7 سے 414 می 1953 کک ا کا لکونھڑی مش رے ا دورا نآ پکا حوصلہقائل دید تھا ہآپ پر ذدہ برا برتحی خوف ذرتھاءف گی کا مآ پک ببخ نی بہت ران تھے 14 می 1953 ءکوآ پک مزا مو تکوش ریرج تب کرد گان آپ نے ائیل ‏ ہکا ؛چنایینٹل